صحت

سلسلہ تحریر نفسیاتی عوارض  قسط 1️ تنہائی پسندی Solitude

ڈاکٹر احمد عروج

 اکولہ

تنہائی پسندی ایک عجیب کیفیت کا نام ہے۔ جہاں یہ کیفیت بہت فائدہ مند ہے وہیں اگر اس کیفیت میں جذبات شامل ہوجائیں تو پھر کئی امراض کا سبب بنتی ہے ۔ دراصل
loneliness یا Solitude
کا دوسرا نام معاشرتی یا سماجی درد بھی ہے  یہ اکثر تعلق یا قربت کی ناپسندیدہ کمی کے ساتھ وابستہ ہوتی ہے ۔ ایسا بالکل بھی نہیں ہے کہ ہم جسے تنہا سمجھ رہے ہیں وہ حقیقت میں تنہا ہو کبھی کبھی انسان تنہا ہوکر بھی خود کو تنہا محسوس نہیں کرتا ۔ اگر ایسی کیفیت ہو کہ انسان ظاہری طور پر تنہا دکھائی دے لیکن وہ خود کو تنہا محسوس نہ کرے تو یہ تنہائی فائدہ مند ہے ۔ برعکس اُس کیفیت کہ انسان محفل میں موجود ہو لیکن خود کو تنہا محسوس کرے یا اپنی تنہائی کو تنہائی میں محسوس کرتا رہے ۔ یہ کیفیت دردناک ثابت ہوتی ہے اس تحریر کو پڑھتے وقت یہ خیال رکھنا اشد ضروری ہے کہ ہر تنہائی پسند شخص Genius نہیں ہوتا اور ناہی ہر تنہائی پسند شخص مریض ہوتا ہے ۔ آپ جیسے جیسے اس مضمون کو پڑھیں گے تنہائی کی افادیت اور نقصانات دونوں آپ کو سمجھ میں آئیں گے ۔
جب انسان بظاہر تنہا ہو لیکن خود کو تنہا محسوس نہ کرے تو اُس کے وجود سے انقلابی افکار و نظریات، تحاریر، قلمی کاوشیں، اور ناقابلِ فراموش ورثہ ملتا ہے ۔ زیادہ تر فلسفی اپنے فلسفوں پر تنہائی میں کام کیا کرتے تھے تقریباً تمام سائنسدانوں نے کارہائے نمایا تنہائی میں انجام دی
مدّبر و مفکروں نے عظیم کتابیں اپنی راتوں کی تنہائی میں تحریر کی  قیدو بند کی تنہائی نے اکابرین کو مفسر قرآن بنایا ۔
 یہ ایسے لوگ تھے جنہوں نے اپنی تنہائی کو  تنہائی نہیں سمجھا ۔
لیکن کچھ لوگ ہوتے ہیں جو یہ کہتے ہیں کہ .
زندگی کی راہوں میں رنج وغم کے میلے ہیں
بھیڑ ہے قیامت کی  اور  ہم  اکیلے ہیں
ایسے لوگوں کی تنہائی دردناک ثابت ہوتی ہے جو اپنے تنہائی کے سبب دھیرے دھیرے موت کے قریب چلے جاتے ہیں۔ خودکشی کے اعداد وشمار کو دیکھیں تو معلوم ہوتا ہے کہ 85 فیصد لوگ اقدام خودکشی سے قبل مکمل یا جزوی طور پر تنہائی پسند ہوگئے تھے ۔ تقریباً 90 سے 95 فیصد ڈپریشن کے مریض اپنے مرض کے شدید ہونے سے قبل تنہائی پسند رہتے ہیں ۔ منشیات کی عادت زیادہ تر تنہائی پسند لوگوں میں ہوتی ہے ۔
تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ معاشرے میں تنہائی پائی جاتی ہے بشمول شادیوں میں شامل افراد اور دوسرے مضبوط تعلقات کے ساتھ ساتھ کامیاب کیریئر کے حامل افراد بھی زیادہ تر لوگ اپنی زندگی کے کچھ مقامات پر تنہائی کا تجربہ کرتے ہیں اور کچھ لوگ اسے اکثر محسوس کرتے ہیں۔ قلیل مدتی جذبات کے طور پر تنہائی فائدہ مند ثابت ہوسکتی ہے۔ یہ تعلقات کو مضبوط بنانے کی ترغیب دیتی ہے۔
 self improvement
کے لئے بھی تنہائی کبھی کبھی معاون ہوتی ہے جبکہ دائمی تنہائی کو وسیع پیمانے پر نقصان دہ سمجھا جاتا ہے ، متعدد جائزے اور میٹا اسٹڈیز کے نتیجہ میں یہ اخذ کیا گیا ہے کہ تنہائی خراب دماغی اور جسمانی صحت کے نتائج کے لئے risk یا ایک خطرہ ہے۔
بہت سے لوگ تنہائی کو مکمل طور پر سمجھ نہیں پاتے اور اس کا علاج کروانا چاہتے ہیں .
جیسا کہ میں عرض ہے کہ تنہائی کی افادیت اور نقصانات دونوں ہیں اسلئے تنہائی کے اقسام اور اسباب دونوں کو سمجھنا ضروری ہے ۔
Tags
Show More

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

اسے بھی پڑھیں

Close
Back to top button